×
العربية english francais русский Deutsch فارسى اندونيسي اردو

خدا کی سلام، رحمت اور برکتیں.

پیارے اراکین! آج فتوے حاصل کرنے کے قورم مکمل ہو چکا ہے.

کل، خدا تعجب، 6 بجے، نئے فتوے موصول ہوں گے.

آپ فاٹاوا سیکشن تلاش کرسکتے ہیں جو آپ جواب دینا چاہتے ہیں یا براہ راست رابطہ کریں

شیخ ڈاکٹر خالد الاسلام پر اس نمبر پر 00966505147004

10 بجے سے 1 بجے

خدا آپ کو برکت دیتا ہے

فتاوی جات / نماز / نمازِ عصر کا وقت کب ہے ؟

اس پیراگراف کا اشتراک کریں WhatsApp Messenger LinkedIn Facebook Twitter Pinterest AddThis

تاریخ شائع کریں:2017-01-10 01:58 PM | مناظر:2638
- Aa +

میں سکول سے سوا دو بجے کے قریب آتی ہوں اس کے بعد سوتی ہوں اورپھر عصر چاربجے ہی میری آنکھ کھلتی ہے ، پھر اس کے بعد نمازِ عصر ادا کرتی ہوں ، آپ اس بارے میں کیا کہتے ہیں؟

ما هو وقت صلاة العصر

جواب

اگر آپ آفتاب کے زرد ہونے سے پہلے پہلے نمازِ عصر پڑھتی ہیں تو پھر یہی اس کا وقت ہے کہ آ پ اس میں یہ نماز ادا کریں اور اگر آپ آفتاب کے زرد ہونے تک نماز کو مؤخر کرتی ہیں تو پھر یہ ضرورت کے علاوہ جائزنہیں ہے ، اور یہ اس لئے کہ نمازِ عصر کے دو وقت ہیں : ایک ضرورت کا وقت اور دوسرا اختیار کا وقت۔ اختیار کا وقت ظہرکے وقت سے آفتاب کے زرد ہونے تک ہے اور ضرورت کا وقت آفتاب کے زردہونے سے آفتاب ڈھلنے تک ہے ۔عصر کے وقت کے بارے میں یہی احادیث سے ثابت ہے ۔

آپ کا بھائی

خالد بن عبد الله المصلح

18/09/1424هـ


آپ چاہیں گے

ملاحظہ شدہ موضوعات

1.

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں