×
العربية english francais русский Deutsch فارسى اندونيسي اردو

خدا کی سلام، رحمت اور برکتیں.

پیارے اراکین! آج فتوے حاصل کرنے کے قورم مکمل ہو چکا ہے.

کل، خدا تعجب، 6 بجے، نئے فتوے موصول ہوں گے.

آپ فاٹاوا سیکشن تلاش کرسکتے ہیں جو آپ جواب دینا چاہتے ہیں یا براہ راست رابطہ کریں

شیخ ڈاکٹر خالد الاسلام پر اس نمبر پر 00966505147004

10 بجے سے 1 بجے

خدا آپ کو برکت دیتا ہے

فتاوی جات / روزه اور رمضان / رمضان کا روزہ توڑا اور بڑھاپے کی وجہ سے دوبارہ روزہ رکھنے سے عاجز رہا۔

اس پیراگراف کا اشتراک کریں WhatsApp Messenger LinkedIn Facebook Twitter Pinterest AddThis

تاریخ شائع کریں:2017-02-28 08:22 PM | مناظر:1440
- Aa +

ایسے شخص کے لئے کیا حکم ہے جو رمضان کا روزہ توڑے اورپھر بڑھاپے کی وجہ سے روزہ رکھنے سےعاجز ہو؟

أفطر في رمضان وعجز عن الصيام لكبر سنه

جواب

حامداََومصلیاََ۔۔۔

امابعد۔۔۔

اللہکیتوفیقسےہمآپکےسوالکےجوابمیںکہتےہیںکہ

جو شخصروزہرکھنےسےعاجز ہو جائےتووہکھاناکھلانےوالےعملکیطرفمنتقلہوجائے، اللہتعالیٰفرماتےہیں:(اورجوطاقترکھتےہوانپرفدیہہےجوکہمسکینکو کھاناکھلاناہے)(البقرۃ:۱۸۴) ابنعباسؓفرماتےہیںکہیہبوڑھےمرداوربوڑھیعورتکےبارےمیںہےجبوہطاقتنہرکھتےہو روزےکاتوہردنکےبدلےایکمسکینکوکھاناکھلائے،اورکھاناکھلانےکیکوئیحدمقررنہیںلہذااگرہرایکمسکینکوایککلویاڈیڑھکلوچاولدےیاپانچمسکینوںکودےیاایکمسکینکوبارباریہفدیہدےتوروزےکےبدلےمیںکافیہوجائےگا۔


آپ چاہیں گے

ملاحظہ شدہ موضوعات

1.

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں