×
العربية english francais русский Deutsch فارسى اندونيسي اردو

خدا کی سلام، رحمت اور برکتیں.

پیارے اراکین! آج فتوے حاصل کرنے کے قورم مکمل ہو چکا ہے.

کل، خدا تعجب، 6 بجے، نئے فتوے موصول ہوں گے.

آپ فاٹاوا سیکشن تلاش کرسکتے ہیں جو آپ جواب دینا چاہتے ہیں یا براہ راست رابطہ کریں

شیخ ڈاکٹر خالد الاسلام پر اس نمبر پر 00966505147004

10 بجے سے 1 بجے

خدا آپ کو برکت دیتا ہے

فتاوی جات / آداب / بالوں کو رنگ لگانے کا حکم

اس پیراگراف کا اشتراک کریں WhatsApp Messenger LinkedIn Facebook Twitter Pinterest AddThis

تاریخ شائع کریں:2017-05-13 12:03 PM | مناظر:1989
- Aa +

مجھے ایک عورت نے سر کے بالوں کو رنگ لگانے سے متعلق سؤال بھیجا، کہتی ہے کہ اس کی عمر ابھی صرف ۳۲ سال ہے، دیندار ہے، اس کے بالوں میں سفیدی آنا شروع ہو گئی ہے، اب وہ چاہتی ہے کہ اس سے شرعی طریقے کے مطابق خلاصی حاصل کرلے تاکہ اسے اپنے شوہر کے سامنے پریشان نہ ہونا پڑے اور دوسری اس کی ہم عمر عورتوں کی باتیں نہ سننی پڑیں، تو کیا سفید بالوں کو رنگنا (کالا رنگ بھی اسی میں شامل ہے) جائز نہیں؟ اس معاملہ میں شریعت کے کیا ضوابط ہیں اس بات کو ملحوظ رکھتے ہوئے کہ یہ عورت اپنے شوہر کیلئے تیار اور مزین ہونا چاہتی ہے؟

حكم صبغ الشعر

جواب

حمد و ثناء کے بعد۔۔۔

 کالے رنگ کے سوا جو رنگ چاہے سر پر لگا سکتی ہے، واللہ اعلم

 


آپ چاہیں گے

ملاحظہ شدہ موضوعات

1.

×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں