×
العربية english francais русский Deutsch فارسى اندونيسي اردو

خدا کی سلام، رحمت اور برکتیں.

پیارے اراکین! آج فتوے حاصل کرنے کے قورم مکمل ہو چکا ہے.

کل، خدا تعجب، 6 بجے، نئے فتوے موصول ہوں گے.

آپ فاٹاوا سیکشن تلاش کرسکتے ہیں جو آپ جواب دینا چاہتے ہیں یا براہ راست رابطہ کریں

شیخ ڈاکٹر خالد الاسلام پر اس نمبر پر 00966505147004

10 بجے سے 1 بجے

خدا آپ کو برکت دیتا ہے

فتاوی جات / روزه اور رمضان / معتکف کامسجد سے نمازوغیرہ کیلئے نکلنا

اس پیراگراف کا اشتراک کریں WhatsApp Messenger LinkedIn Facebook Twitter Pinterest AddThis

تاریخ شائع کریں:2017-02-26 11:11 AM | مناظر:613
- Aa +

سوال

کیا معتکف کے لئے یہ جائز ہے ؟کہ رمضان کے آخری عشرہ میں اپنی معتکف گاہ سے نکل کر کسی انتھائی قریبی مسجد میں جہاں پیدل چلاجاسکتا ہو،جائے اورتراویح پڑھ کر واپس بھی لوٹ آئے ؟

معتكف يخرج من المسجد للصلاة في آخر

جواب

حامداََ و مصلیاََ۔۔۔

اما بعد۔۔۔

اللہ کی توفیق سے ہم آپ کے سوال کے جواب میں کہتے ہیں کہ

اس طرح کرنا جائزنہیں،کیونکہ اعتکا ف مسجد کولازم پکڑنے کانام ہے اوراس طرح کرنے سے اعتکاف کی مخالفت لازم آتی ہے


ملاحظہ شدہ موضوعات

1.
×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں