×
العربية english francais русский Deutsch فارسى اندونيسي اردو

خدا کی سلام، رحمت اور برکتیں.

پیارے اراکین! آج فتوے حاصل کرنے کے قورم مکمل ہو چکا ہے.

کل، خدا تعجب، 6 بجے، نئے فتوے موصول ہوں گے.

آپ فاٹاوا سیکشن تلاش کرسکتے ہیں جو آپ جواب دینا چاہتے ہیں یا براہ راست رابطہ کریں

شیخ ڈاکٹر خالد الاسلام پر اس نمبر پر 00966505147004

10 بجے سے 1 بجے

خدا آپ کو برکت دیتا ہے

فتاوی جات / متفرق فتاوى جات / کیا بجلی کے کرنٹ سے مرنے والا شہید ہے؟

اس پیراگراف کا اشتراک کریں WhatsApp Messenger LinkedIn Facebook Twitter Pinterest AddThis

مناظر:2406
- Aa +

سوال

کیا بجلی کے کرنٹ سے مرنے والے کا حکم بھی آگ سے جلنے والے کی طرح ہے کہ اس کو شہید شمار کیا جائے؟

هل المصعَق كهربائيًّا شهيد؟

جواب

حامداََ و مصلیاََ۔۔۔

اما بعد۔۔۔

اللہ کیتوفیق سے ہم آپ کے سوال کے جواب میں کہتے ہیں کہ

میری رائے اس معاملہ میں یہ ہے کہ جلنے اور کرنٹ لگنے میں کچھ فرق ہے، اگرچے دونوں پر اثر ایک سا ہی ہوتا ہے، اور اس فرق کی وجہ سے میں حتماََ کرنٹ لگنے والے کو جلنے والے کے حکم میں علی الاطلاق شمار نہیں کر سکتا، مگر اس صورت میں کہ کرنٹ لگنے سے بھی آگ لگ گئی ہو یعنی کرنٹ کا جھٹکا بہت ہی شدید ہو۔ جہاں تک عام کرنٹ لگنے کی بات ہے جس سے بدن نہیں جلتا تو اس پر آگ والا حکم صادق نہیں آتا۔

آپ کا بھائی

خالد المصلح

26/10/1424هـ


ملاحظہ شدہ موضوعات

1.
×

کیا آپ واقعی ان اشیاء کو حذف کرنا چاہتے ہیں جو آپ نے ملاحظہ کیا ہے؟

ہاں، حذف کریں